منہاج ویمن لیگ کی ’دہر میں اسم محمد سے اجالا کر دے‘ کانفرنس

حضور نبی اکرم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کے جملہ اوصاف سراپا قرآن ہیں: فرح ناز
امت کے جملہ مسائل ومصائب کا حل اخلاق حسنہ کی پیروی میں ہے
اللہ کی صفات کی کوئی حد ہے اور نہ کلام اللہ کے معانی کی کوئی حد ہے
منہاج القرآن اخلاق محمدی صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کے فروغ کے مشن پر کاربند ہے: صدر ویمن لیگ کا خطاب

لاہور (21 نومبر 2019ء) منہاج القرآن ویمن لیگ کی مرکزی صدر فرح ناز نے کہا ہے کہ حضور نبی اکرم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کے جملہ اوصاف و اخلاق سراپا قرآن ہیں، اللہ کی صفات کی کوئی حد ہے اور نہ کلام اللہ کے معانی و معارف کی کوئی حد ہے، قیامت تک کے لیے قرآن اپنے مطالب و مفاہیم میں امت کی رہنمائی کرتا رہے گا۔ ہمارا عقیدہ اور ایمان ہے کہ امت محمدیہ صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کے جملہ مسائل اور مصائب کا حل اخلاق حسنہ کی پیروی میں ہے۔ وہ گزشتہ روز منہاج القرآن ویمن لیگ پشاور کے زیر اہتمام ”دہر میں اسم محمد سے اجالا کر دے“ کے موضوع پر منعقدہ سیرت النبی کانفرنس سے خطاب کررہی تھیں۔ کانفرنس میں ہر مکتبہ فکر سے تعلق رکھنے والی سینکڑوں خواتین اور منہاج القرآن ویمن لیگ کی کارکنان، عہدیداران نے شرکت کی۔ کانفرنس کے آغاز میں مختلف سکولوں کی بچیوں نے ہاتھوں میں شمعیں پکڑ کر حضور سرور کونین صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کی بارگاہ اقدس میں ہدیہ نعت پیش کیا۔

مرکزی صدر فرح ناز نے اپنے خطاب میں کہا کہ ام المومنین سیدہ عائشہ صدیقہ رضی اللہ عنہا سے روایت ہے آپ نے سوال کے جواب میں فرمایا کہ ’سارا قرآن حضور صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کا اخلاق ہے‘۔ حضور نبی اکرم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کا کائنات میں ظہور پیکر بشری میں ہوا، اللہ تعالیٰ نے آپ صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کی ان بشری صفات پر اپنی صفات الوہیت کا رنگ چڑھا دیا تھا، اس کے لیے اللہ تعالیٰ نے قرآن مجید کی آیات اتاریں، ہر آیت میں اللہ تعالیٰ نے اپنی ایک صفت اتاری، جیسے جیسے آیات کا نزول ہوتا گیا حضور نبی اکرم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم سے بشری اخلاق کا پرتو اترتا گیا اوراللہ تعالیٰ کی صفات کا رنگ چڑھتا گیا۔

فرح ناز نے کہا کہ تحریک منہاج القرآن اخلاق محمدی صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کے ترغیب و فروغ کے مشن پر کاربند ہے۔یہ ایک تسلیم شدہ حقیقت ہے کہ سوسائٹی کے تہذیبی، اخلاقی معیار خواتین کی تعلیم و تربیت کے مرہون منت ہیں۔ اگر ہم چاہتے ہیں کہ پاکستان کا معاشرہ اعلیٰ اخلاقی اقدار پر استوار ہو جائے تو ہمیں سیرت النبی صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم ،امہات المومنین کی تعلیمات پر عمل پیرا ہونا ہوگا اور اس کے لیے پڑھی لکھی خواتین کو گھر گھر اور گلی گلی جا کر اسوہ حسنہ کے پیغام کو عام کرنا ہو گا۔ فرح ناز نے کہا کہ آپ صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کے حلم، بردباری، عفو و درگزر، رحمت و شفقت اور اخلاق کریمانہ کا عالم یہ تھا کہ آپ صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم نے لوگوں کی طرف سے کسی ایذا اور تکلیف پر کبھی بددعا نہیں کی اور آج ہم لوگوں کو اپنے چھوٹے چھوٹے دنیاوی فوائد کے لیے تکلیفیں اور اذیتیں دیتے ہیں۔ حضور نبی اکرم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کی حیات مبارکہ لوگوں کے لیے آسانیاں تلاش کرتے اور انہیں سہولتیں فراہم کرتے بسر ہوئی۔ انہوں نے کہا کہ ہم اپنے عزیز و اقارب، اہل محلہ کے لیے ہمیشہ حسن ظن رکھیں، اسی سوچ سے ہم اپنے گھر،محلہ،شہر یہاں تک کہ ملک کو امن،محبت کا گہوارہ بنا سکتے ہیں۔ انہوں نے کانفرنس کو کامیاب بنانے کے لیے دن رات کوشش کرنے پر صوبہ خیبرپختونخوا اور پشاور تنظیم کو خصوصی طور پر مبارکباد دی۔


Your Comments

منہاج القرآن
منہاج ویلفئیر
منہاج اوورسیز
پاکستان عوامی تحریک
اسلامک لائبریری
عرفان القرآان
خطابات
ماہنامہ منہاج القرآن
ماہنامہ دختران اسلام
کاپی رائٹ © 1994 - 2020 منہاج القرآن انٹرنیشنل. جملہ حقوق محفوظ ہیں.